Mazloom ki Himayat aur Zalim ke Samne Khade Hona مظلوم! کی حمایت کرنا، ظالم کے آگے کھڑے ہونا، اسلامی تعلیم کا حصہ!!! - NOORI ACADEMY

Latest

Noori Academy

Search Now

Monday, February 22, 2021

Mazloom ki Himayat aur Zalim ke Samne Khade Hona مظلوم! کی حمایت کرنا، ظالم کے آگے کھڑے ہونا، اسلامی تعلیم کا حصہ!!!

 

مظلوم! کی حمایت کرنا، ظالم کے آگے کھڑے ہونا، اسلامی تعلیم کا حصہ!!!

 

تحریرمحمد ہاشم قادری مصباحی جمشیدپور


طاقت ور ہمیشہ کمزور پر طرح طرح سے ظلم کرتاہے،وہ یہ سوچتا ہے کہ اس کی کوئی پکڑ کر نے والا نہیں ہے،یاد رکھیں ظالموں کا انجام کبھی اچھا نہیں ہو تا،مظلوم کی فریاد اس تیر کی طرح ہے جس سے ظالم کبھی بچ نہیں سکتا-مظلوم کی دعا ہر صورت میں مقبول ہوتی ہے چاہے،فاجرحتی کہ کافر ہی کیوں نہ ہو۔
 

مظلوم کی بدعا

 
رسولِ کریم صلی اللہ علیہ وسلم کا فرمان ہے کہ: مظلوم کی بددعا چنگاری کی طرح آسمان پر جاتی ہے-(التر غیب والتر ہیب، حدیث؛2228,)۔آج ہر طرف ظلم کا بازار گرم ہے،یہاں تک کہ مسلمان ہی مسلمان پر ظلم ڈھا رہا ہے، مسلم معا شرے میں آج انگنت برائیاں سرایت(پیوست) ہو گئی ہیں، ایک دو ہوں تو گنایا جائے، دو چار دس ہوں تو اس کا رونا رویا جائے، دین سے دوری وسماجی برائیاں شباب پر ہیں اللہ خیر فر مائے…’’آمین‘‘ 
 
اہل علم خاص کر علما کی ذ مہ داری بنتی ہے کہ برائیوں کے سد باب کے لیے اپنی قوت کے مطابق کوشش جا ری رکھیں۔ دنیا میں اسلام کے ماننے والے کتنے ہیں؟ یہ بات اہم نہیں ہے بلکہ اہم بات یہ ہو گی مذہب کے ماننے والے لوگ،کیا اپنی مذہبی کتاب قر آن مجید کے بتا ئے ہوئے راستے پر چل رہے ہیں؟ کیا یہ اپنے پیغمبر ﷺ کی تعلیمات کو سینے سے لگائے ہوئے ہیں؟ مذہب چاہے کوئی بھی ہو اس کے ماننے وا لوں میں بنیادی کردار’’انسانیت‘‘ ہو نا چاہیے۔ اگر آدمی انسان نہیں بنتا ہے تو معاشرہ جنگل میں بدل جاتا ہے۔ اگر لوگ من مانی کر نے لگیں گے تو مذ ہب کے لا لے (دشوار ہو نا، مشکل ہو نا) پڑ جائیں گے۔ عبادت گاہیں تو کھلی رہیں گی، روحانیت غائب ہو جائے گی، عبادت گا ہوں اور اس کے اطراف کا امن وسکون بر باد ہو جائے گا قرآن کریم میں انسا نیت کی خد مت پر بہت زور دیا گیا ہے انسانوں کے ساتھ حسن سلوک کر نے، مظلو موں کی مدد کر نے (خواہ وہ دوسرے مذ ہب کا ہی ہو) کا حکم دیا گیا ہے،
 
 قر آن کریم نے مسلما نوں کو یہ تعلیم دی ہے۔وَتَعَاوَنُوْا عَلَی ا لْبِرِّ وَ التَّقْویٰ وَ لَا تَعَا وَ نُوْاعَلَی ا لْاِثْمِ وَا لْعُدْ وَانِ۔(القر آن،سورہ مائدہ5، آیت3) نیکی اور تقویٰ کے کا موں میں ایک دوسرے کا تعاون کرو اور گناہ و ظلم و زیادتی کے کا موں میں کسی کا تعا ون نہ کرو اور اللہ سے ڈرتے رہو۔ بیشک اللہ کی سزا بہت سخت ہے۔
 
 

نبی رحمت ﷺ کاظلم وزیا دتی کے خلاف معا ہدہ

 
آقا ﷺنے ظا ہری بعثت سے پہلے مظلو موں کی مدد کے لیے معاہدہ فر مایا،عرب میں لوگوں کی جان و مال،عزت محفوظ نہ تھی۔ ظالموں کا ہاتھ پکڑ نے والا کوئی نہیں تھا،ظلم ہوتا ہوا دیکھتے رہتے اور مظلوم کی مدد نہ کرتے، اسے روکنے والا کوئی نہ تھا، ظلم کا بازار گرم تھا اسے روکنے اور ٹھنڈا کر نے کے لیے کوئی آگے نہیں بڑھتا تھا۔ حرم شریف مکہ جیسے شہر کی حالت بھی اچھی نہیں تھی۔ اس صورت حال سے آپ کو بہت تکلیف،قلق اور صد مہ رہتا تھا۔ اس لیے اسے رحمت عالم ﷺ نے بدلنا چا ہا،آپ نے بعض درد مند کو مشورہ کے لیے عبداللہ بن جدعان کے گھر جمع کیا اور فیصلہ کیا کہ ظلم و زیادتی کو ہر قیمت پر روکا جائے چاہے اس کے لیے جو بھی قر بانی دینی پڑے دی جائے گی لیکن مظلو موں پر ظلم روکا جائے گا کسی بھی شخص خواہ (دوسرے مذہب کا ہی ہو) چاہے وہ مکہ کا رہنے والا ہو یا باہر سے آیا ہواہو، ظلم نہیں ہونے دیا جائے گا اور مظلو موں کی مدد کی جائے گی۔آپ ﷺ اس معاہدہ (Agreement) میں شریک تھے۔ اس معاہدہ کو معاہدہ ٔ جدعان کہتے ہیں۔ یہ معاہدہ آپ کی ظاہری بعثت سے پہلے ہوا تھا۔ لیکن بعثت کے بعد بھی آپ اس معاہدہ کی تعریف کرتے ہوئے خوش ہوتے آپ نے فرمایا: میں عبداللہ بن جد عان کے گھر میں اس معاہدہ میں شریک ہوا،آپ نے فر مایا اس معاہدہ کے عوض مجھے سرخ اونٹ (عرب کی سب سے قیمتی اور بڑی دولت) مل جائیں تو بھی پسند نہیں۔ اگر اسلام کے آنے کے بعد بھی مجھے اس کی دعوت دی جائے تو میں اسے قبول کروں گا۔(ابن سعد، طبقات،ج،1ص129،ابن ہشام، سیرۃ النبی، ج 1، ص144 سے145) 
 
آپ ﷺ نے اس کی تعلیم دی کہ جو شخص بھی ہماری ہمدردی اور مدد کا محتاج ہو اس کی مدد کرنی چاہیے۔ قرآن کریم اور احادیث کے ذخیرہ میں بہت سی احادیث پاک مو جود ہیں،حضرت ابو ہریرہ رضی اللہ عنہ سے روایت ہے کہ رسول اللہ ﷺ نے فر مایا:رحم اور ہمدردی تو اس شخص سے نکال دی جاتی ہے جو بد بخت ہے۔(مسند احمد:ج،2،ص301،تر مذی، باب ما جاء فی رحمت ا لناس) 
 
آقا ﷺ نے فر مایا تم میں بہترین شخص وہ ہے جس سے خیر کی توقع کی جائے اور جس کے شر سے لوگ محفوظ رہیں اور تم میں بد تر ترین شخص وہ ہے جس سے خیر کی توقع نہ کی جائے اور جس کے شر سے لوگ محفوظ نہ رہیں۔(مسند احمد،ج2-،ص368)۔
 
مومن کو ستانا اور توبہ نہ کرنا سخت عذاب کا باعث: مومن کو ستانے پرقرآن مجید میں سخت عذاب کی وعید (سزا دینے کا وعدہ،Warning) آئی ہے اللہ تعالیٰ کا فر مان ہے۔ تر جمہ: بیشک جن لو گوں نے مسلمان مردوں اور عور توں کو ستایا پھر توبہ(بھی) نہ کی تو ان کے لیے جہنم کا عذاب اور جلنے کا عذاب ہے۔(القرآن، سورہ البروج85،آیت10)
 
 آج مسلم سماج میں کم زوروں کو طرح طرح سے ستانا ایک عام بات ہوگئی ہے، اس خرابی،برائی،کمی کو رسول اللہ ﷺ نے اعلان نبوت کے پہلے دور کیا افسوس آج اس طرف توجہ نہیں دی جارہی ہے۔ اگر کم زوروں میں کوئی کم نصیب شخص بے چارہ امام ہو تو پھر کیا کہنے اس کو ستانے کے ساتھ ساتھ اسکی عزت کو ملیا مٹ کر نے میں کوئی کسر نہیں چھوڑی جاتی۔ بہت سے واقعات ایسے ہیں جو تحریر میں لانے کے لائق ہیں، مدھیہ پر دیس کے ایک گاؤں چاند کھڑی، ضلع اندور کی مسجد میں بیچارے امام صاحب نے جمعہ کے خطبہ میں ’’غیبت‘‘ کے موضوع پر بیان فر مایا … صف اول کے کسی مسلمان دبنگ بھائی کو وہ بیان پسند نہیں آیا… بس پھر کیا تھا … مصلیان کرام نے امام صاحب اور ان کے معصوم بچوں اور بیوی کو زبر دست بارش میں گھر سے باہر نکا ل دیا اور ظلم کی حد پار کرتے ہوئے بے چا رے امام کو گاؤں میں بھی نہیں رکنے دیا اسی بے بسی میں امام صاحب بس اسٹینڈ جاکر گھر جانے پر مجبور ہو گئے دودن بقرعید کے باقی تھے عید تک رکنے کی مہلت بھی نہیں دی ظالموں نے۔ امام صاحب میرٹھ،یو پی کے رہنے والے تھے،امام صاحب کی اہلیہ گود میں بچی کو لئے باپردہ کھڑی ہیں اور 2 چھوٹی چھوٹی بچیاں بارش میں بھیگ رہی ہیں اور زار وقطار رورہی ہیں،انتہائی شرم اورحیرت کی بات ہے کہ وہاں کے لوگ تماشہ دیکھ رہے ہیں کسی کے اندر ایمانی حرارت نہیں جاگی کہ امام صاحب کی مدد کرے۔یہ ویڈیو سوشل میڈیا پر بہت وائرل ہوا-
 
 

نوٹ

 
 مذکورہ امام صاحب کے ساتھ جو یہ نازیبا انتہائی شر مناک سلوک کر نے والے مسجد کے مومنین کرام ہی ہیں… امریکہ، اسرائیل یا کسی باطل حکومت یا اورلوگوں کا کام نہیں ہے۔انسانیت سے گرا ہو، ا س طرح کا کمینہ پن مسلما نوں کے دبنگوں نے کیا چور کی داڑھی میں تنکا وہ قرآن کریم واحادیث، اللہ ورسول کی با ت کو ہضم نہ کر سکے نزلہ عضوئے بر ضعیف اپنی طاقت کا مظاہرہ کمزور امام پر کر کے دکھایا۔
 
 
ایک سکنڈ کے لیے سوچیں کیا غیبت کے احکام نازل فر مانے والا رب ذوا لجلال والاکرام! بھی امام صاحب کی طرح بے بس، لاچار و مجبور ہے کیا؟(معاذ اللہ ثم معاذ اللہ ہزار بار توبہ) ہر گز ہر گز نہیں وہ تو قادر مطلق ہے اور پکڑ کی طاقت رکھتا ہے، قر آن کریم میں خدائے قہار و جبار کا اعلان ہے۔
 
تر جمہ: اللہ کا ہی ہے جو کچھ آسمانوں میں ہے اور جو کچھ زمین میں ہے، اور اگر تم ظاہر کرو جو کچھ تمھار ے جی میں ہے یا چھپاؤ اللہ تم سے اس کا حساب لے گا تو جسے چاہے بخشے گا اور جسے چاہے گا سزا دے گا اور اللہ ہر چیز پر قادر ہے۔(القرآن، سورہ البقر2،آیت284) (کنز الایمان)
 
اللہ ضرور ظالموں کی پکڑ فر مائے گا دل سے دعا ہے اللہ ظالموں کی جلد خبر لے اور عبرت ناک انجام سے دوچار کرے تمام مسلمانوں سے گزارش ہے کہ اپنے نفس کا جائزہ لیں اور خود ا حتسابی کرتے ہوئے اپنے گریبان میں جھا نکیں… امریکہ،اسرائیل، آر ایس ایس،بی جی پی کو برا کہہ کہہ کر وقت بر باد نہ فر مائیں اللہ کی طرف توبہ سے رجوع کریں اور امام و موذن کی عزت و توقیر کریں۔ ان ظالموں کا کیا حال ہے معلوم نہیں، اللہ ضرور ان کی پکڑ فر مائے گا ان شاء اللہ،لیکن امام صاحب کو دوسری جگہ مل گئی الحمدللہ۔ اما م مو ذن کو ستانے وا لوں کے کئی عبرت ناک واقعا ت ہیں جو قا بل ذکر ہیں، مقالہ طویل ہونے کا خوف ہے(2)واقعہ مطالعہ فر مائیں ہمارے شہر جمشید پور کی ایک بڑی مسجد کے ایک ذمہ ار بیچا رے موذن پر لعن و طعن جاری رکھنا اپنا فرض منصبی سمجھتے تھے۔ موذن صاحب چھٹی پر گھر گئے اور آنجناب نے فون کر دیا اب آپ واپس نہ آئیں ہم نے دوسرا موذن رکھ لیا ہے۔ بیچارے موذن صاحب واپس آ ئے اپنا ساراسامان لیکر جانے لگے تو لوگوں سے مصافحہ کیا تو اس گھمنڈی نے مصافحہ بھی نہیں کیا بلکہ ایک طنزیہ، زہریلی مسکراہٹ سے اپنی خباثت کا اظہار بھی کیا۔ خدا کی لاٹھی میں آواز نہیں ہو تی لیکن ایسی ضرب لگتی ہے بڑے بڑے فر عونوں کی فرعونیت غرق ہو جاتی ہے،صرف تیسرے دن ہی آنجناب کے بیٹے جو کہ ایک گور نمنٹ کی نوکری میں تھے نوکری سے سسپنڈ کر دیئے گئے اور جیل یاترا بھی کر نے چلے گئے۔اب آنجناب کو ہوش آیا اور موذن کو ستانے کا احساس ہوا، تیر کمان سے نکل چکا تھا،لیکن موذن صاحب نے اپنی شرافت کا مظاہرہ فر مایا اور انکی معافی طلبی پر معاف فر مادیا، دوسرا واقعہ بھی بڑا عبرت ناک ہے جس کی پوری تفصیل کے لیے ناچیز کا مضمون’’مظلوم امام!!! بے حس عوام احساس زیاں جاتا رہا‘‘ نیٹ پر ضرور مطالعہ فر مائیں۔38 سالہ تجر بہ کار امام! حضرت حافظ و قاری امام الدین صاحب عمر 55 سال، انتہائی شریف،کم سخن پابند صوم و صلاۃ، مگن پور،ضلع رام گڈھ،جھار کھنڈ میں 4سال سے امامت فر مارہے تھے،اپنے وطن چھٹی پر گئے اور دوسرے دن کمیٹی کے ذمہ دار نے فون کر دیا کہ دوسرا امام رکھ لیا ہے آپ کو آنے کی ضرورت نہیں وہ بے چارے ہکا بکا رہ گئے اور صبر کا دامن تھام لیا۔ پھر کیا ہوا ان کا صبر اس ظالم کے لیے ایساقہر بنا کہ جائے عبرت ہے۔ اللہ پکڑ کی قوت رکھتا ہے اور ظالموں کو نہیں بخشتا۔ کچھ ہی دنوں پہلے حافظ وسیم صاحب جوبے چا ر ے پانچ بچوں کے باپ تھے لاک ڈاون میں کمیٹی والوں نے امامت سے نکال دیا، بہت افلاس میں زندگی گزار رہے تھے بچوں کی فاقہ کشی نہ دیکھ سکے،ذہنی توازن کھو بیٹھے،خود کشی کر لیے، اسی طرح ابھی جلدی ایک امام صاحب مسجد کے بوسیدہ حجرہ میں سورہے تھے حجرہ گرا امام صاحب انتقال فر ما گئے ابھی جلدی مسجد کے امام حضرت مولانا محمد عمران صاحب سردی کی شدت سے انتقال کر گئے ان کی غربت کی وجہ کر اوڑھنے کا کوئی سا مان نہیں تھا،اس طرح کے کئی واقعات ہیں، افسوس اور شرمناک ہے، یہ قوم اللہ تعالیٰ کو کیا جواب دیگی اللہ ظالموں کی پکڑ فر ما ئے آمین ثم آمین یا رب العالمین-
 

ظا لموں کی بے حسی

 

؎ حیراں ہوں دل کو روؤں کہ پِیٹوں جِگر کو میں

مقدور ہو تو ساتھ رکھوں نوحہ گر کو میں (مرزا غالب)

 

ظالم اور مظلوم کا حکم

 ارشاد باری تعالیٰ ہے۔تر جمہ:اللہ کسی(کی) بری بات کا بآ واز بلند(ظاہراً وعلانیۃً) کہنا پسند نہیں فر ماتا سوائے اس کے جس پر ظلم ہوا(اسے ظالم کا ظلم کا آشکار کر نے کی اجازت ہے)، اوراللہ خوب سننے والاجاننے والا ہے۔(القرآن،سورہ نساء4، آیت، 147) ظالم اور مظلوم دو نوں کو احساس دلایا جا رہا ہے۔ ظالم یہ نہ سوچے کے اس کے مظالم کا کسی کو علم ہی نہیں اور دنیا کی کوئی عدالت اسے سزا دے نہیں سکتی۔ یا دنیا کی کوئی طاقت اس کا کچھ بگاڑ نہیں سکتی،ا? تعالیٰ ظالم کے کر تو توں سے واقف ہے اور ظالم کی پکڑ کی قوت بھی رکھتا ہے، اللہ کی عدالت سے اسے سزا مل کر رہے گی۔ اور مظلوم کو تسلی دی جارہی ہے کہ اگر کوئی دوسر تمھارا داد رسی نہیں کرتا تو صبر کرو اللہ تعالیٰ تیرا فریاد رس ہے تیری مظلو میت اور بے کسی کا اسے خوب علم ہے اور وہ ضرور پکڑ فر مانے والاہے۔وَکَذٰلِکَ نُوَلِّیْ بَعْضَ الظّٰلِمِیْنَ بَعضًا بِمَا کَانُوا یَکسِبُونَ (القرآن، سورہ الا نعام 6، آیت 129)
 
 ترجمہ: اور یونہی ہم ظالموں میں ایک کو دوسرے پر مسلط کرتے ہیں بدلہ ان کے کیے کا (کنز الا یمان)تفسیر ابن کثیر میں اس آیت کریمہ کی تفسیر میں صاحب تفسیر یوں لکھتے ہیں، ظالم ظالموں کا مومن مو منوں کا دوست ہے ۔ اللہ تعالٰی لوگوں کو جو ایک جیسے اعمال کرتے ہیں تو آپس میں ان کو دوست بنا دیتا ہے – ایمان تمناؤں اور ظاہر ی دیواروں کا نام نہیں، مالک بن دینار رحمۃ اللہ علیہ نے کہا کہ میں نے زبور شریف میں پڑھا ہے کہ اللہ تعالیٰ فرماتا ہے کہ میں منا فقین کا انتقام (بدلہ) منا فقین ہی کے ذریعہ سے ہی لوں گا، اور یہ قرآن کریم میں بھی ہے چنانچہ ارشاد باری تعالیٰ ہے:ہم اسی طرح ایک ظالم کو دوسرے ظالم کا دوست بنا دیتے ہیں-حدیث پاک میں ہے حضرت ابن مسعود رضی اللہ عنہ سے روایت ہے کہ جس نے ظالم کی مدد کی تو اسی ظالم کو اس پر مسلط (قابض، غالب، زور آور) کردیتا ہے ۔
 
اوپر مذکورہ آیت مبارکہ کی تفسیر میں علامہ اسماعیل حقی علیہ الرحمۃ فرما تے ہیں – اس آیت کریمہ کے معنیٰ یہ ہوئے کہ جس طرح ہم نے خراب لوگوں کے دوست ان کے بہکا نے والے جن و شیا طین کو بنا دیا، اسی طرح ظالموں میں سے بعض کو بعض کاولی بنا دیتے ہیں – اوربعض، بعض سے ہلاک ہو تے ہیں اور ہم ان کے ظلم وشر کشی اور بغاوت کا بدلہ ظالموں سے ہی ظالموں کو دلا دیتے ہیں۔ (تفسیر ابن کثیر) یہ ہے قدرت کا انتقام ۔
 

کعبہ کی عزت سے زیادہ مومن کی عزت: 

 
مومن کی عظمت وشان کا ذکر قر آن واحا دیث میں موجود ہے، مومن کو ستانا گناہ عظیم ہے مسلمان کو ستانے والے کو اللہ رسوا فر ماتا ہے۔حضرت عبداللہ بن عمر رضی اللہ عنھما کی یہ حدیث اہل ایمان کے لیے کافی ہے کہ رسو ل اللہ ﷺ منبر پر تشریف لائے، بلندآواز سے پکارا اور فر مایا:
 
’’یَا مَعْشَرَ مَنْ اَسْلَمَ بِلِسَانِہِ وَلَمْ یُفْضِ الْإِیمَانُ إِلَی قَلْبِہِ لَا تُوْذُوا الْمُسْلِمِینَ وَلَا تُعَیِّرُوہُمْ وَلَا تَتَّبِعُوا عَوْرَاتِہِمْ فَإِنَّہُ مَنْ تَتَبَّعَ عَوْرَۃَ اَخِیہِ الْمُسْلِمِ تَتَبَّعَ اللَّہُ عَوْرَتَہُ وَمَنْ تَتَبَّعَ اللَّہُ عَوْرَتَہُ یَفْضَحْہُ وَلَوْ فِی جَوْفِ رَحْلِہِ قَالَ وَنَظَرَ ابْنُ عُمَرَ یَوْمًا إِلَی الْبَیْتِ اَوْ إِلَی الْکَعْبَۃِ فَقَالَ مَا اَعْظَمَکِ وَاَعْظَمَ حُرْمَتَکِ وَالْمُوْمِنُ اَعْظَمُ حُرْمَۃً عِنْدَ اللَّہِ مِنْکِ (صحیح ترمذی: 2023)۔
 
تر جمہ:’’اے اسلام لانے والے زبانی لو گوں کی جماعت! جن کے دلوں تک ایمان کما حقہ نہیں پہنچا ہے! مسلمانوں کو تکلیف مت دو، ان کو عارمت دلاؤ اور ان کے عیب نہ تلاش کرو، اس لیے کہ جو شخص اپنے مسلمان بھائی کے عیب ڈھونڈتا ہے، اللہ تعالیٰ اس کاعیب نکالتا ہے اور اللہ تعالیٰ جس کے عیب نکالتا ہے،اسے رسوا وذلیل کر دیتا ہے، اگر چہ وہ اپنے گھر کے اندر کے اندر ہو، راوی (نافع) کہتے ہیں: ایک دن ابن عمر رضی اللہ عنھما نے خانہ کعبہ کی طرف دیکھ کر کہا: کعبہ! تم کتنی عظمت والے ہو! اور تمھاری حر مت (عزت) کتنی عظیم ہے، لیکن اللہ کی نظر میں مو من(کامل) کی حر مت تجھ سے زیادہ عظیم ہے۔(ترمذی:حدیث،2023) مو من کی عزت اور اس کو باقی ر کھنا اپنے کو جہنم سے محفوظ ر کھنا ہے،حضرت ابوہریرہ رضی اللہ عنہ سے روایت کہ آپ ﷺ نے فر مایا جس نے مو من بھائی کو بے عزتی سے بچایا(عزت کو بچایا رسوا نہ کیا) خدائے پاک اس کے چہرہ کو قیامت کے دن جہنم سے بچائے گا۔(مکار م اخلاق خرائطی ج،2ص841) حضرت براء بن عاذب رضی اللہ عنہ سے مر وی ہے کہ آپ ﷺ نے فرمایا سود کے بہتر دروازے ہیں۔ اد نیٰ دروازہ ماں سے ز نا کے برا برہے اور سب سے بڑا سود یہ ہے کہ اپنے مو من بھائی کی عزت کے پیچھے پڑ جائے۔(مطالب عالیہ ج،3ص2 مجمع الزوائد،ج8ص92)مومن کی حر مت کعبہ سے زیادہ بہت پیاری حدیث مطالعہ فر مائیں اور اپنے ایمان میں جلا پیدا فر مائیں۔دوست کا لفظ اپنے اندر بہت معنویت و گہرائی رکھتا ہے دوست اچھے بھی ہوتے ہیں برے بھی ہوتے ہیں جان بچانے والے بھی ہوتے ہیں اور کہیں لے جاکر مروانے والے بھی ہوتے ہیں۔حضرت علی کرم اللہ وجہ الکریم فرماتے ہیں کہ دوست اور دشمن تین طرح کے ہوتے ہیں: جو تمہارا دشمن ہے اس کا دوست بھی تمہارا دشمن ہے اور وہ تمہارے دوست کا بھی دشمن ہے۔ اللہ رب العزت نے بھی اپنے نیک بندوں کو دوست بنایا اور انھیں امتحان سے گزار کر انعامات کی بارش فر مائی۔ حضرت ابراہیم علیہ ا لسلام کو اللہ رب العزت نے اپنا دوست بنایا ’’خلیل اللہ‘‘ اللہ کا دوست، حضرت ابراہیم علیہ ا لسلام کا لقب۔’’حضرت موسیٰ کلیم اللہ تھے، لقب‘‘۔ the friend(of god)Abraham, (سیرۃا لنبی ﷺ ج4،ص422)منا فقت آج کل عام بیماری ہے اللہ ہم سب کو بچائے اس موذی گناہ سے کیو نکہ اللہ نے منا فق کی سزا کا اعلان یوں فر مایا۔(القرآن،سورہ نساء4،آیت145) تر جمہ: بیشک منافق لوگ دو زخ کے سب سے نچلے در جے میں ہوں گے اور آپ ان کے لیے ہر گز کوئی مدد گار نہ پائیں گے۔ جو لوگ منافقت اور سازشیں اور تخریبیں کرتے ہیں وہ احکم الحاکمین رب ذوالجلال کے اس فرمان پر غور فرمائیں(القرآن:سورہ مجادلہ:58، آیت نمبر:10) ترجمہ: سرگوشی محض شیطان ہی کی طرف سے ہوتی ہے تاکہ وہ ایمان والوں کو پریشان کرے وہ (شیطان)ان (مومنوں)کا کچھ بگاڑ نہیں سکتا مگر اللہ کے حکم سے، اور اللہ ہی پر مومنوں کو بھروسہ رکھنا چاہیئے۔
 
 ہم تمام مسلما ن ایک ہیں ایک ہی رہنا چاہیے ہم مسلمان ایک دوسرے کے سلامتی کے ضامن ہیں تمام مسلمانوں کو اس بات کا خیال رکھنا چاہیے۔ ہم تمام لوگ مسلمانوں کی عزت کو بچائیں سر سبز و شاداب رکھیں۔ ہماری صفوں میں چھپے ہوئے انتشار پسندوں سے چو کنا رہنا ہو گا اسی پسِ منظر میں ایک شاعر نے کیا خوبصورت پیغام دیا ہے۔
 

؎ کھلے دشمن کا استقبال ہمیں منظور ہے لیکن 

 خدا محفوظ رکھے دوست کے ذہنی تعصب سے

 
اور منور را نا بھی بہت خوبصورت بات کہہ رہے ہیں۔
 

؎ کہیں سچ بولنے سے شعریت مجروح ہو تی ہے 

 تکلف بر طرف قاتل کو قاتل کہہ دیا جائے

 
شاعر مشرق علامہ ڈاکٹر اقبال کچھ اس طرح فرماتے ہیں۔
؎ اگرچہ بت ہیں جماعت کی آستینوں میں ٭ مجھے ہے حکم اذاں لاالہٰ الا اللہ
ٍ اللہ ہم تمام مسلمانوں کومظلو موں کی مدد کرنے اور امام و مؤذن کی حر مت، عزت و اہمیت کو سمجھنے اوران کی عزت و مددکر نے کی تو فیق عطا فر مائے آمین ثم آمین-


 ٹی آر پی اور افواہوں سے دور،سچائی ، دیانت اور انصاف سے قریب ، مبنی بر حقیقت مضامین ،مقالات ، تعلیمی ، انقلابی ، معیاری اور تحقیقی و تفتیشی ویڈیوز کے لیے غیر جانبدار ادارے نوری اکیڈمی کے یوٹیوب چینل ، ویب سائٹس اور سماجی رابطے کی تمام سوشل سائٹس پر اپڈیٹ پانے کے لیے نوری اکیڈمی کو سبسکرائب ، فالو اور لائک کریں۔

 


No comments:

Post a Comment

Popular

Categories

” نیکی کر سوشل میڈیا پر ڈال “:پُرانی کہاوت کا نیا وَرژن (1) 31 December (2) 8 Interesting Facts About Saturn (1) Aala Hazrat (1) Aazadi (10) Advocate Momin Musaddique Ahmed (2) Air Pollution (1) Al Mukhtar Magazine (1) Allama Qamruzzama Aazmi (1) Announcement (71) ANSAR SHAIKH IAS BIOGRAPHY (1) Arfa Khanum Sherwani Artcile (2) Article (129) Asthma Day (1) ATAURRAHMAN NOORI (50) Azmate Mustafa (1) Bachcho ko Sudhara kaise Jaye ? (1) Bahar-E-Sunnat 2012 (6) Bahar-E-Sunnat 2013 (26) Bahar-E-Sunnat 2014 (6) Baqra-Eid Article (2) Biography of Maulana Shakir Ali Noori (1) Book (39) Book Ijra News (34) Book on Ertugrul Ghazi (2) Book on Sultanat-E-Usmania (2) Books (28) BOOKS OF AMEER SUNNI DAWAT-E-ISLAMI (23) BOOKS OF ATAURRAHMAN NOORI (17) BOOKS OF OTHER ULMA (4) Books of Sayyed Ameenul Qadri (8) Breaking News (70) CAA (6) CAB (6) Competitive Exams (2) Competitive Exmas (9) Condolence Letter from Allama Qamr-Uz-Zama Khan Aazmi (1) Corona Malegaon Pattern (4) Corona Virus (1) Corona Virus ki Waba Aur Qaum-E-Muslm By Allama Qamruzzama Aazmi (2) Corona Warrior Certificate (1) Cricket (4) Cronan Virus (16) CSE (7) CTET (1) Current Affairs (17) Darul Uloom Sultaniya (1) Dr Aamir ENT (1) Dr Hamid Iqbal DCH. ڈاکٹر حامد اقبال (1) Editorial Articles (32) Editorial Articles of Bahar-E-Sunnat (4) Education (74) Electronic Media Association of Maharashtra (1) EMAM (3) Ertugrul Ghazi (1) Exam (22) Fatma Ka Laal Maidan E Karbala Mein (1) Feature (104) Features (37) Ghazal (4) Ghazala Fatma Research Scholar (1) Government and Administration Failure (1) Gulam Mustafa Naeemi (1) Gulam Mustafa Razvi (5) Hafiz Gufran Ashrafi (6) Hafiz Hashim Qadri (15) Haj Ki Fazilat (1) Harappa And Mohenjo-daro (1) Hayatul-Mawat Book (1) Hazrat Abu Huraira (1) Hazrat Ibraheem (1) Hazrat Khalid Bin Waleed (1) Health (4) Hindustan Ki Fazeelat (1) HISTORY (5) Ideal Teacher by Google (1) Image (3) Imam Ahmad Raza (1) Imam Husain Karbala Me (1) Imran Jameel (1) Indian History in Urdu (2) ISLAMIC HISTORY (6) Islamic Scholar aur TV Debates (2) Jang-E-Aazadi 1857 me Ulma ka Kirdar (1) Kanzul Iman Monthly Magazine May June 2020 (1) KANZULIMAN 2016 (8) Kanzuliman Delhi Monthly Magazine February 2021 (1) Kanzuliman Delhi Monthly Magazine March 2021 (1) KANZULIMAN MAGAZINE 2017 (11) KANZULIMAN MONTHLY MAGAZINE 2018 (8) KanzulIman Monthly Magazine January 2021 (1) Khalid Ayyub Misbahi (7) Khandesh (1) Khanqah-E-Ashrafiya (1) Khanqah-E-Barkatiya (3) Khawaja Gareeb Nawaz (2) Khudkushi (2) Latest Corona News of Maharashtra (5) Lock Down aur Madarsa (1) Love Jihad (1) Magazine (1) Malegaon Corona (6) Malegaon District Nashik (5) Malegaon Freedom Fighters (1) Malegaon Municipal Corporation Recruitment 1006 Posts (1) Malegaon Suicide Case (2) Masjid News (2) Maualana Mohsin Raza Ziyai (5) Maula (1) Maulan Md Shakir Ali Noori (1) Maulana Sadique Raza Misbahi (1) Maulana Sayyed Ameen-Ul-Qadri (1) Maulana Shakir Ali Noori (1) Meelade Mustafa (1) Meere Arab ko aayi Thandi hawa jaha se (1) MH-SET EXAM (12) MHRD (2) Mid-Day Meal (1) Moharram (1) Momin Faiyyaz Ah (1) Monthly Sunni Dawat-E-Islami Magazine (11) Monthly Sunni Dawat-E-Islami Magazine 2013 (10) Monthly Sunni Dawat-E-Islami Magazine 2014 (6) MONTHLY SUNNI DAWATEISLAMI MAGAZINE 2017 (12) Mubarak Kapdi (1) Mufti Nizamuddin Razvi (2) Mukhtar Adeel Article (2) Mumtahin (1) Neki kar Social Media par Daal (1) News (100) News18 Anchor Amish Devgan (2) Nooh Siddiqui IRS (1) Noori Academy (101) Noori Mission (4) NPR (1) NRC (26) NTA NET (12) NTA NET SUBJECT URDU (6) NTA NET URDU (7) Online Education (3) Ottoman Empire (2) Paighamat-E-Noori (1) Payame Barkaat (1) Prime Time (3) Program Reports (29) PROTEST (10) Rajab Ke Fazayel (1) Ram Janam Bhumi Babri Masjid ka Sach By Shitla Singh (1) Raza Academy (4) Research Article (1) Saday-E-Qalam (57) Safar Nama (1) Science (1) Seerat (1) SET (3) Shagufta Subhani (2) SHAIKH SALMAN PATEL (2) Shakeel Subhani (2) Sheikh Abubakr Ahmad Biography (1) Special Interview (1) SPEECH OF AMEER SUNNI DAWATE ISLAMI (1) SPEECH OP AMEER SUNNI DAWATE ISLAMI (1) Sports (4) Suicide aur Islam (2) Suicide Cases (1) Sunni Dawat-E-Islami (3) Sunni Dawateislami 2016 (12) SUNNI DAWATEISLAMI MONTHLY MAGAZINE 2018 (5) Supreme Court (2) Syed Faooq Miya Chishti (1) Tafseer-O-Hadees me Hindustan ka Tazkira (1) Tajalliyat-E-Noori (1) Tajush Sharia Number (2) Teacher's Day (1) TET (1) The Wire (2) The World's 500 Influential Muslims (2) Top Story (19) TV Debate (2) UGC NET (10) UGC NET URDU (8) UGC NET URDU SYLLABUS (6) Ummeed Team By SDI (1) UPSC (12) UPSC URDU. (5) Urdu_Adab (1) Vacancies (3) Wadaye Tajush Sharia Book (1) Wali Aurangabadi (1) Wali Deccani (1) www.markazlawcollege.com (1) Zarb-E-Qalam (13) Ziyaul Mustafa Misbahi (1) آئی اے ایس افسر شاہ فیصل (1) اسلام اور ہندوستان کا تعلق (1) اشرف الفقہامفتی مجیب اشر ف صاحب علیہ الرحمہ (1) اعلیٰ حضرت اور مشائخ چشتیہ (1) امیر سنی دعوت اسلامی کی خدمت میں درگاہ انتظامیہ نے ایوارڈ پیش کیا (1) انڈیا بمقابلہ انگلینڈ: اکشر پٹیل نے گلابی گیند سے تاریخ رقم کی (1) اَنوارِ تاج الشریعہ نمبر (1) بچوں کو سدھارا کیسے جائے ؟ (1) بعد از خدا بزرگ توئی قصہ مختصر (1) پانچ چیزوں کوغنیمت جانیں! . مولانا محمّد شاکرعلی نوری صاحب (1) پروفیسر شرف النہار صاحبہ کی حیات و خدمات پر مبنی کتاب کی ترتیب (1) پروگریسیو اسکول (1) پہلی سے بارہویں جماعت تک ٹیچر بننے کے لیے اب ٹی ای ٹی امتحان پاس کرنا لازمی (1) تجلیات نوری (1) تفسیر و حدیث میں ہندُستان کا تذکرہ (1) تھرٹی فرسٹ :احتساب کادن (1) تھرٹی فرسٹ منانا اتنا ہی ضروری ہے تو اس طرح منائیں (1) ٹیم انڈیا نے انگلینڈ کے خلاف ٹی 20 سیریز کے لیے اعلان کردیا (1) جے جوان ،جے کسان (1) حافظ محمد قمرالدین رضوی صاحب پر کنزالایمان کا خصوصی شمارہ (1) حافظ محمد ہاشم قادری صدیقی مصباحی (1) حضرت ابراہیم علیہ السلام کی قربانیاں (1) حضرت علی المرتضیٰ کر م اللہ وجہہ کی خلافت اور اہم کارنامے (1) خدارامسلمان ہوش کے ناخن لیں! (1) خواجہ غریب نواز کے فیض کی جلوہ باریاں (1) خود کشی ایک سماجی مسئلہ ہے (1) دارالعلوم سلطانیہ چشتیہ اہل سنت دھولیہ میں عظیم الشان علی لائبریری کا افتتاح (1) دردانہ انجم مس (1) دعوت توحید (1) دنیا کی 500 با اثر شخصیات (2) دینی کتابوں کے قدیم ناشر حافظ محمد قمرالدین رضوی سپرد خاک (1) ڈاکٹرس کے ساتھ غیر اخلاقی حرکت (1) ڈپریشن اور مایوسی کی سب بڑی وجہ مادی نظریات کا فروغ (1) رام جنم بھومی بابری مسجد کا سچ (1) رب تعالیٰ کی رحمت (1) رشبھ پنت میچ میں اکشر پٹیل کو وسیم کے نام سے کیوں بلارہے تھے ؟ (1) زحل کے بارے میں 8 دلچسپ حقائق (1) زنا کاری بدفعلی،بے حیا انسان ،اندھا قانون یہ کیسا زمانہ آیا؟ (1) سدرشن ٹی وی کے پروگرام ” یو پی ایس سی جہاد“ پر سپریم کورٹ کی پابندی (1) سہ ماہی پیام برکات میگزین شمارہ جولائی تا ستمبر2020ء (1) سید فاروق میاں چشتی کے تاثرات (1) سیدناابراہیم خلیل اللہ علیہ السلام (1) سیدناامام جعفر صادق: خانوادہ نبوت کے عظیم چشم وچراغ (1) شعیرہ غزل کو کامیابی مبارک (1) شہزادۂ حضور احسن العلماء حضرت سید محمد افضل میاں قادری علیہ الرحمہ کی رحلت (2) طلبا کی کامیابی و ترقی میں اُستاذ کا کردار (1) عاشقان اہل بیت۲۲رجب المرجب کوقرآن خوانی ونیاز کا اہتمام کریں (1) عامری عظمت اقبال گوگل کی جانب سے مثالی استاد منتخب (1) عزیمت حج (1) علامہ قمرالزماں خان اعظمی کی جانب سے تعزیت نامہ (1) فاتح خیبر حضرت علی رضی اللہ عنہ کی سیرت و کردار پر ایک نظر (1) فاطمہ کا لال میدان کربلا میں (1) فتوی نویسی سے متعلق قانونی رہنمائی (1) فضائل رجب المرجب (1) فضائل ہند کی روایتیں (1) فضل ملت کا وصال ملک وملت کے لیے عظیم خسارہ : مولانا محمد شاکر علی نوری (1) فضیلة الشیخ حضرت ابوبکر احمد (1) کتاب ”این آر سی: اندیشے ،مسائل اور حل“ (1) کرونا کال میں اندیشہ وخوف سے بھرا سفر (1) کرونا وائرس کی وَبا اور قومِ مسلم (1) گلہائے اُردو (2) گیسوئے اُردو (2) لبیک اللَّھم لبیک (1) لمبے عرصے تک تعلیمی اداروں کا بند رہنا تباہ کن (1) لَوجہاد: سیاسی کرسی کی بحالی اور اسلام کو بدنام کرنے والا ہتھکنڈہ (1) ماہِ محرم میں کھلونوں کی دکانوں پر ” گن کلچر “ (1) ماہنامہ کنزالایمان دہلی ، شمارہ فروری 2021 (1) ماہنامہ کنزالایمان دہلی ، شمارہ مارچ 2021ء (1) مظلوم اِمام!!! (1) مظلوم! کی حمایت کرنا، ظالم کے آگے کھڑے ہونا، اسلامی تعلیم کا حصہ!!! (1) مولانامحمد شاکر نوری کا عورتوں کے آن لائن سالانہ سنی اجتماع سے خطاب (1) نیشنل ٹیلنٹ سرچ اسکالر شپ امتحان (1) ہڑپہ ، موہن جودڑو اور مالیگاﺅں (1) ہندوستان میں شرحِ خواندگی : چند حقائق (1) ہندوستانی جیلوں میں مسلمانوں کا بڑھتا تناسب (1) وَداعِ تاجُ الشریعہ (1) وقفی اور غصبی زمین کا شرعی حکم (1) ووٹ ڈالنا ایک اہم فریضہ (1) یو جی سی نیٹ امتحان کی تیاری کیسے کریں؟ (1) یوسف پٹھان نے کرکٹ کے تمام فارمیٹس سے سبکدوشی کا اعلان کیا (1) खानकाहे बरकातिया मारहरा (1) ख़ुदकुशी के पांच मुख्य कारण (1) न्यूज़ 18 टीवी चैनल (1) मालेगाव महानगरपालिकेत 1006 पदांची भर्ती (1)